صفحہ اول / کالم و مضامین

کالم و مضامین

جنگ ستمبر کی یادیں

الطاف حسن قریشی کا کالم 6 ستمبر قوم کی وحدت، عظمت، عزیمت اور شجاعت کا استعارہ بن گیا ہے جو ہمارے جذبوں اور حوصلوں کو گرماتا رہتا ہے۔ میں نے اس درخشندہ اور تابندہ استعارے کو تمام تر وسعتوں کے ساتھ اپنی تازہ ترین تصنیف ’’جنگ ِ ستمبر کی یادیں‘‘ میں محفوظ کر لیا ہے۔ اِس سترہ روزہ جنگ میں …

مزید پڑھیں

ایک نظر اس طرف بھی

مقتدا منصور کا کالم عمران خان نیازی حلف اٹھا کر ملک کے 22 ویں وزیراعظم منتخب ہوچکے ہیں۔ اگلے ماہ کے اوائل میں نئے صدر کے انتخاب کے بعد اگلے پانچ برس کے لیے حکومتی ڈھانچہ تکمیل پذیر ہوجائے گا۔ نومنتخب وزیراعظم نے پہلی نشری تقریر بھی کردی ہے۔ جس پر ان کے حامیوں کی داد وتحسین، جب کہ نکتہ …

مزید پڑھیں

جناب وزیراعظم! 5 سالہ ٹیسٹ میچ شروع

محمود شام کا کالم 5 سالہ ٹیسٹ میچ شروع ہوگیا ہے۔ اپوزیشن وکٹیں گرتی دیکھنے کے لیے بے تاب ہے۔ عوام چوکوں چھکوں کے منتظر۔ حکمت عملی آپ کو بنانی ہے۔ بہت مبارک ہو آپ اس منصب جلیلہ پر فائز ہوگئے ہیں جس کی آرزو لیے بہت سے دُنیا سے اُٹھ گئے۔ یہ لیلیٰ ان کی نہ ہوسکی۔آپ کو یقیناََ …

مزید پڑھیں

نواز شریف بمقابلہ شہباز شریف

سلیم صافی کا کالم   وقت نے ثابت کردیا کہ میاں نوازشریف سیاست خوب کرسکتے ہیں لیکن حکومت نہیں چلاسکتے اور میاں شہباز شریف صرف حکومت چلاسکتے ہیں لیکن سیاست نہیں کرسکتے ۔ میاں نوازشریف کو دو مرتبہ اقتدار دلوایاگیا اور ایک مرتبہ عوامی طاقت سے حاصل کیا لیکن تینوں مرتبہ اپنی مدت پوری کرسکے اور نہ دیگر اداروں کے …

مزید پڑھیں

جمہوریت کی ریل گاڑی

زاہدہ حنا کا کالم   انگریز بہادر کے زیر سایہ ہم نے بیسویں صدی میں انتخابات کا ذائقہ چکھا اور اب آزادی کے ستر برس بعد بھی یہ سلسلہ جاری ہے۔ برصغیر جو کبھی ہندوستان کے نام سے پہچانا جاتا تھا اب ہندوستان، پاکستان اور بنگلہ دیش میں تقسیم ہوچکا ہے۔ ان ملکوں میں سے ہندوستان اور بنگلہ دیش میں …

مزید پڑھیں

’’اگست کے نظارے ۔۔۔۔‘‘

غازی صلاح الدین کا کالم   اگست کی گھن گرج آپ سن رہے ہیں۔ یہ وہ مہینہ ہے جس کے مختلف دنوں میں الگ الگ رنگ کی یادیں جاگتی ہیں۔ کچھ پرانی اور کچھ اس سفر کے مختلف مقامات کی جس کا آغاز ہم نے1947میں کیا تھا۔ اور اب دیکھئے کہ اس مہینے میں ہم اپنی تاریخ کا ایک اور …

مزید پڑھیں

بے زبانی ہے زباں میری

الطاف حسن قریشی کا کالم   عجب وقت آیا ہے کہ جن کی زبانیں گز بھر کی ہیں اور وہ اپنی بے زبانی پر آہیں بھرتے اور آنسو بہاتے رہتے ہیں کہ وہ تو اپنے دل کی بات زبان پر نہیں لا سکتے۔ اس پر بھی شکایت یہی ہے کہ حقیقت کے اظہار پر پابندی ہے اور اندر ہی اندر …

مزید پڑھیں