صفحہ اول / آرکائیو / ہالینڈ میں ہونے والا گستاخانہ خاکوں کا مقابلہ منسوخ، احتجاج ختم

ہالینڈ میں ہونے والا گستاخانہ خاکوں کا مقابلہ منسوخ، احتجاج ختم

ایمسٹرڈیم ۔ دنیا بھر میں مسلمانوں کے احتجاج کے باعث ہالینڈ میں ہونے والا گستاخانہ خاکوں کا مقابلہ منسوخ کردیا گیا۔ خبررساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق ہالینڈ کے رکن پارلیمنٹ گیرٹ ولڈر نے گستاخانہ خاکوں کا مقابلہ منعقد کرنے کا اعلان کیا تھا جس کے باعث دنیا بھرمیں مسلمانوں کی جانب سے شدید ردعمل دیکھنے میں آیا اور مختلف ممالک میں اس کے خلاف مسلسل احتجاج جاری ہے اب وہ مقابلہ منسوخ کردیا گیا ہے۔

پاکستان نے بھی اس معاملے پر حکومتی و عوامی سطح پر شدید احتجاج ریکارڈ کرایا ہے، وزیر اعظم عمران خان نے اعلان کیا ہے کہ اس معاملے کو او آئی سی اور اقوام متحدہ میں اٹھایا جائے گا جس کے لیے وزیر خارجہ کو ہدایات جاری کردی گئی ہیں۔ اسی ضمن میں پاکستان بھر میں مختلف جماعتوں کی جانب سے بھی احتجاج جاری ہے جن کا مطالبہ ہے کہ ہالینڈ کے سفیر کو ملک بدر کیا جائے۔

راولپنڈی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہالینڈ کے پاکستان میں سفیر نے بتایا کہ گستاخانہ خاکوں کا مقابلہ ترک کردیا گیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہالینڈ میں گستاخانہ خاکوں سے مسلمانوں میں اضطراب پیدا ہوا، ہم نے ڈچ وزیر خارجہ سے پاکستانی عوام کے جذبات کا اظہار کیا۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ تحریک لبیک نے گستاخانہ خاکوں پر اپنا احتجاج ریکارڈ کرایا، اللہ کا کرم ہوگیا کہ معاملہ ٹل گیا اب درخواست ہے کہ احتجاجی قافلہ پر امن طور پرمنشتر ہوجائے۔

بعدازاں تحریک لبیک پاکستان نے اسلام آباد میں ریلی ختم کرنےکا اعلان کردیا۔

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے اپنے ٹوئیٹر پیغام میں کہا کہ ہالینڈ میں گستاخانہ خاکوں کے مقابلے کی منسوخی پاکستانی حکومت اور عوام کی بڑی کامیابی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کا پیغام اور ان کی ہدایت پر وزارت خارجہ کے روابط اس کامیابی کاباعث بنے۔

میڈیا کے مطابق توہین آمیز خاکوں کے خلاف تحریک لبیک کی قیادت میں لاہور سے نکلنے والا لانگ مارچ جہلم سے ہوتا ہوا اسلام آباد پہنچا، جہاں انہوں نے توہین آمیز خاکوں کے خلاف دھرنا دینا تھا تاہم ہالینڈ کی جانب سے گستاخانہ خاکوں کا مقابلہ منسوخ ہونے کے بعد امیر خادم حسین رضوی کی قیادت میں ہونے والے مارچ کو اسلام آباد میں ختم کرنے کا اعلان کردیا گیا۔

اس سے قبل ایک ویڈیو پیغام میں وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ گستاخانہ خاکوں کے مسئلے پر اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کے ذریعے اقوام متحدہ میں بات کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہالینڈ میں گستاخانہ خاکوں کا مسئلہ ہر مسلمان کا مسئلہ ہے، نبی صلی اللہ علیہ وسلم مسلمانوں کے دل میں رہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جب کوئی نبی کریم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی شان میں گستاخی کرتا ہے تو تمام مسلمانوں کو تکلیف ہوتی ہے۔ عمران خان نے کہا کہ مسئلہ یہ ہے کہ مغرب کے لوگوں کو اس چیز کی سمجھ نہیں ہے کیوں کہ ہم مسلمانوں نےان کوسمجھایا نہیں۔ انہوں نے کہا کہ جس طرح مغرب کے لوگ اپنے دین کو دیکھتے ہیں وہ بالکل مختلف ہے۔

Check Also

جنگ ستمبر کی یادیں

الطاف حسن قریشی کا کالم 6 ستمبر قوم کی وحدت، عظمت، عزیمت اور شجاعت کا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے